حضرت والا دامت برکاتہم کا سفر ملائیشیا

حضرت والا دامت برکاتہم کا سفر ملائیشیا

اہلِ ملائیشیا کے بے حد اصرار پرحضرت والا مولانا شاہ حکیم محمد مظہر صاحب دامت برکاتہم اپنی مصروفیات اور بیماری کے باوجود4ذیقعدہ1437؁ھ (8 اگست 2016؁ء) بروز پیر کو اپنے دیگر احباب کے ساتھ ملائیشیا کے سفر پر روانہ ہوئے۔

جہاں ملائیشیا کے ایئرپورٹ پر علماء کرام کی ایک جماعت حضرت والا دامت برکاتہم کے استقبال کے لیے منتظرتھی،حضرت والا کو دیکھتے ہی تمام افراد کے چہروں پر ایک خوشگوار فرحت کا سماں پیدا ہوگیا۔اور حضرت والا کا پرتپاک استقبال کیا گیااور پھر حضرت والا کے مرید خاص مولانا اسماعیل صاحب نے اپنے گھر جو شہر سے ذرا ہٹ کر مضافاتی علاقہ میں ہے،ٹھہرایا۔جہاں حضرت والا سے مقامی حلقے میں اہم مقام رکھنے والے بہت سے  علماءکرام حضرت والا کی زیارت اور ملاقات کے لیے تشریف لاتے رہے۔

وہاں حضرت والا کے مختلف مقامات پر بیانات ہوئے جہاں مقامی افراد کی کثیر تعداد نے شرکت کی، اور بہت سےعلماء وطلباء کے علاوہ عوام کی ایک کثیر تعداد بھی حضرت والا کے ہاتھ بیعت ہوئے اور داخلِ سلسلہ ہوئے۔اللہ تعالیٰ تمام سالکین جدید وقدیم کو استقامت نصیب فرمائیں اور مقصد میں کامیابی عطا فرمائیں،اور اللہ تعالیٰ حضرت والا دامت برکاتہم کے سفر کو بھی قبولیت بخشیں ۔

مہمانوں کی آمد

امریکا اور افریقہ سے تبلیغی جماعت میں چار ماہ لگانے والے چار ساتھی حضرت والا دامت برکاتہم کی زیارت اورملاقات کے لیے حاضر ہوئے، اور ایک دن حضرت کی صحبت سے خوب مستفید ہوئے۔ حضرت والا دامت برکاتہم نے حضرت والا رحمۃ اللہ علیہ کے مواعظِ حسنہ انہیں دیے۔

امریکا سے بھی چار احباب پر مشتمل تبلیغی جماعت خانقاہ امدادیہ اشرفیہ حاضر ہوئی اور حضرت والا کی زیارت وملاقات کی ،حضرت والا نے انہیں قیمتی نصائح سے نوازا اور مواعظِ حسنہ بھی عنایت فرمائے۔

مولانا فضل الرحمٰن صاحب کراچی تشریف لائے اور شیر پاؤ ہاؤس میں اکابر علمائے کرام  کا اجلاس منعقد کیا ، جس میں وفاق المدارس کے صدر شیخ الحدیث حضرت مولانا سلیم اللہ خان صاحب دامت برکاتہم العالیہ ،حضرت مفتی محمد تقی عثمانی صاحب ، حضرت مفتی محمد رفیع عثمانی صاحب ،حضرت  ڈاکٹر عبد الرزاق اسکندر صاحب ، حضرت والا مولانا شاہ حکیم محمد مظہر صاحب حفظہم اللہ تعالیٰ اور دیگر علماء کرام نے شرکت کی۔

جس میں حالاتِ حاضرہ کے علاوہ دیگر اُمور پر تبادلہ خیال ہوا ۔اور علماء کرام کی جانب سے قیمتی آراء پیش کی گئیں۔اللہ ربّ العزت سے دعا ہے کہ اجلاس کے تمام مقاصدِ حسنہ کو محض اپنے فضل سے قبول فرمائیں، اور ملتِ اسلامیہ پاکستان کو ہر اندرونی وبیرونی سازشوں سے محفوظ فرمائیں، آمین۔

اِنتقالِ پُرملال

 حضرت مفتی محمد تقی عثمانی صاحب دامت برکاتہم کے خسر جناب حضرت شرافت صاحب 22/شوال 1437؁ھ کو اپنے خالقِ حقیقی سے جاملے۔ اِنَّا لِلہِ وَ  اِنَّااِلَیۡہِ رٰجِعُوۡنَ

حضرت والا دامت برکاتہم کو اطلاع ملتے ہی حضرت دارالعلوم کراچی روانہ ہوگئے اور نمازِ جنازہ میں شرکت فرمائی، اور تعزیت کی۔

 حضرت ڈاکٹر عبد الحی عارفی صاحب رحمۃ اللہ علیہ کے صاحبزادے جناب حسن عباس عارفی صاحب انتقال فرماگئے، جن کی نمازِ جنازہ جامعہ دارالعلوم کراچی میں حضرت مفتی محمد تقی عثمانی صاحب کی امامت میں ادا کی گئی۔ بعد ازاں انہیں دار العلوم کراچی کے قبرستان میں والد کے پہلو میں سپرد خاک کردیا گیا، مرحوم کافی عرصے سے علیل تھے، ان کی عمر تقریباً 95 سال تھی حضرت مولانا شاہ محمد اشرف علی صاحب تھانوی رحمۃ اللہ علیہ سے بیعت تھے۔

ادارہ خانقاہ امدادیہ اشرفیہ اور اس کے رئیس حضرت مولانا شاہ حکیم محمد مظہر صاحب دامت برکاتہم لواحقین کے اس غم میں برابر کے شریک ہیں،اللہ تعالیٰ سے دعا ہے کہ مرحوم کی بے حساب مغفرت فرمائیں،اور لواحقین کو صبرِ جمیل عطا فرمائیں،آمین۔ادارہ قارئین سے دعا اور ایصالِ ثواب کی اُمید رکھتا ہے۔

متعلقہ مراسلہ

Last Updated On Thursday 19th of October 2017 12:54:35 AM